افغان طالبان کا کابل میں ہونے والے تازہ بم حملے کی ذمہ داری قبول کرنے سے انکار ، ہلاکتیں 80 سے تجاوز کر گئیں ، پاکستان کی شدید مذمت ، دکھ کی اس گھڑی میں افغان بھائیوں کے ساتھ ہیں دفتر خارجہ –

افغان دارالحکومت کابل کے وسطی علاقے میں غیر ملکی سفارتخانوں کے قریب کار بم دھماکے کے نتیجے میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد اب تک 80 سے زیادہ ہو چکی ہے ، جبکہ 300 سے زیادہ افراد زخمی ہیں – دھماکے میں مرنے والوں اور زخمیئوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں – ہلاک ہونے والوں میں بی بی سی کے لیے کام کرنے والا ڈرائیور اور زخمیوں میں چار صحافی زخمی بھی شامل-

حملہ سفارتی علاقے زنباق اسکوائر کے نزدیک ہوا، جہاں قریب ہی حکومتی دفاتر کے علاوہ افغان صدر کا دفتر بھی ہے۔ افغان طالبان نے کابل میں ہونے والے تازہ بم حملے کی ذمہ داری قبول کرنے سے انکار کر دیا ہے جبکہ جرمن وزیر خارجہ زیگمار گابریئل نے تصدیق کر دی ہے کہ کابل میں ہوئے اس حملے کی وجہ سے وہاں واقع جرمن سفارتخانہ بھی متاثر ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس واقعے میں عمارت کے باہر موجود افغان سکیورٹی گارڈ مارا گیا جبکہ عملے کے دیگر مقامی ارکان بھی زخمی ہوئے ہیں۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں