ایٹمی پاکستان کے تمام ہیروز کو ہمارا سلام ، قوم کو انیسواں یوم تکبیر مبارک

28مئی 1998ء جمعرات کے دن 3 بجکر40 منٹ پرڈاکٹرعبدالقدیر خان کی نگرانی اور دوسرے قومی سائنسدانوں کی معیت میں 5 ایٹمی دھماکے کر کے پاکستان نے ہمسایہ ملک کی برتری کا غرور خاک میں ملا دیا تھا – انیس سال پہلے آج ہی کے دن پاکستان نے دنیا کی ساتویں جبکہ اسلامی دنیا کی پہلی ایٹمی قوت بننے کا اعزاز حاصل کیا – ایٹمی دھماکے اس لئے کئے گئے کہ 11 مئی 1998 کو پوکھران میں ایٹمی دھماکے کرکے ہندوستان نے خطے کی سلامتی کو خطرے میں ڈال دیا تھا –

پاکستان کے وزیراعظم میاں نواز شریف پراس وقت دو طرفہ دباؤ تھا ایک طرف عوام کے جذبات کہ ہندوستان کو جواب دیتے ہوئے ایٹمی دھماکہ کر دیا جائے اور دوسری طرف عالمی طاقتوں کا دباؤ تھا کہ ایسا بالکل نہ کیا جائے ، یہ ہی وجہ تھی کہ امریکی صدر بل کلنٹن، برطانوی وزیراعظم ٹونی بلیئر اور جاپانی وزیراعظم نے پاکستان پر دباؤڈالا کہ وہ ایٹمی دھماکہ نہ کریں ، کہا جاتا ہے کہ اس وقت کے امریکی صدر بل کلنٹن نے پانچ بار میاں نواز شریف کو ٹیلی فون کیا کہ وہ ایٹمی دھماکہ نہ کریں اور انہیں اربوں ڈالر امداد کی مشروط پیش کش بھی کی گئی – تاہم عالمی دباو کے باوجود وزیر اعظم نواز شریف نے جرات مندی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 28 مئی کے دن پانچ ایٹمی دھماکے کرنے کا حکم دے دیا اور چاغی کے پہاڑوں پر نعرہ تکبیر کی گونج میں ایٹمی تجربات کردئیے گے-

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں