باغی فوجیوں کا ٹرائل شروع

ترک میڈیا کے مطابق جن ٤٠ باغی فوجیوں پر بغاوت کے مقدمے کی سماعت شروع کی گئی ہے ان پر بغاوت پلان کرنے والوں کی طرف سے بنائی گی کمیٹی “Peace At Home Counci ” کا حصہ ہونے کے الزام کے علاوہ ” آئین کی خلاف ورزی” ، ” حکومت اور پارلیمنٹ پر قبضے کے لئے طاقت اور تشدد ” ، “٢٥٠ ترک شہریوں کو شہید کرنے ” اور ” ٢٧٣٥ ترک شہریوں کو مارنے کی کوشش کرنے” کے اقدامات کےتحت مقدمات شامل ہیں –

بغاوت کے الزام میں ٢٢٠ لوگ گرفتار ہیں جن میں دو درجن سے زیادہ ترک جرنیلوں سمیت ائر فورس چیف اکین ازترک اور ترک صدر طیب اردوان کا ملٹری اے آئی ڈی ای لیفٹینٹ کرنل علی یازیسی بھی شامل ہے –

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں