حکومت کی بڑی وکٹ‌گر گئی، وفاقی وزیر مستعفی

پاکستان اسپورٹس بورڈ کے ڈائریکٹر جنرل کو عہدے سے ہٹانے کا ڈراپ سین ہوگیا ،وفاقی وزیر ریاض پیرزادہ نے استعفی دیدیا، ان کا کہنا تھا کہ نیب فواد حسن فواد کے خلاف خاموش کیوں ہے، استعفیٰ واپس لے کرتھوکا نہیں چاٹوں گا ۔ ذرائع کے مطابق ن لیگ کی بڑی وکٹ گرنےوالی ہے،وزیرِبین الصوبائی رابطہ ریاض پیرزادہ نے ناصرف وزارت سے استعفیٰ دے دیا ہے بلکہ انہوں نے حکومت میں بیٹھے کرپٹ افراد کامعاملہ اسمبلی میں اٹھانے کا اعلان بھی کردیا ہے۔

ریاض پیرزادہ نے وزیراعظم کے پرنسپل سیکریٹری فواد حسن فواد پر تیر کے نشتر چلا دئیے ،ان کا کہنا تھا کہ وزیر داخلہ کی بیٹی بھارت سیف گیمز میں گئی تھی، انہوں نے فواد حسن فواد کی کرپشن کی نشاندہی کی، کابینہ اجلاس میں احتجاج بھی کیا لیکن کسی نے ان کی ایک نہ سنی، بتایا جائے کہ نیب فواد حسن فواد کے معاملے میں خاموش کیوں ہے، جنہوں نے ان کے ساتھ بدکلامی کی، وہ خاندانی آدمی ہیں ، توہین برداشت نہیں کرسکتے۔

ریاض پیرزادہ کا کہنا تھا کہ کرپٹ گدھوں کی پاکستان اسپورٹس بورڈ پر نظریں ہیں، کرپٹ لوگ غریبوں کو کیسے کرپٹ کہہ سکتے ہیں ، جو لوگ اربوں کی کرپشن کرتے ہیں انہیں شرم آنا چاہیے۔ریاض پیرزادہ نے کہا کہ سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ اور وزیراعظم کے پرنسپل سیکرٹری اربوں روپے کی کرپشن کر رہے ہیں،وسیم باکسر کے مسئلے پر ہمیں چور سمجھا گیا، وہ فی الحال وزیر اعظم کے خلاف کچھ نہیں کہنا چاہتے لیکن وزیراعظم کو کرپٹ افسروں کے خلاف کارروائی کرنا ہوگی۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں