عمر خان – مستقبل کا ہیرو؛ فیض رسول ہاشمی

ابراہم ڈی ویلیئرز ، شین واٹسن ، شعیب ملک ،عمر اکمل ، لیوک رونکی ، کیمرون ڈیلپورٹ جسیے خطرناک بلے بازوں کو اپنی گیند بازی سے چکما دینے والا مستقبل کا ہیرو — عمر خان


پی ایس ایل فور اختتامی مراحل میں داخل ہوچکا ہے ہر سیزن سے ہی ہمیں اچھے فاسٹ بولر ملے ہیں تو اسپنرز بھی کسی سے پیچھے نہیں رہے۔ 2016 محمد نواز اور شاداب خان 2017 میں پی ایس ایل کی کارکردگی پر قومی ٹیم میں آئے۔ ابتسام شیخ نے 2018 میں پشاور زلمی کے لیے کیفیتی بولنگ کی مگر قومی سلیکٹرز کی آنکھوں سے اوجھل رہے۔
اس سیزن میں بھی فاسٹ بولرز کی طوطی بولتی نظر آئی تو وہیں کراچی کنگز کے بائیں ہاتھ سے اسپن بولنگ کرنے والے 19 سالہ عمر خان نے بڑے بڑے بلےبازوں کو پچ پر فریز کرکے شائقینِ کرکٹ اور مبصرین کو حیران کردیا۔ 10 اننگز میں گھومتی گیندوں سے بیٹسمینوں کو پریشان کیا۔ 34 اوورز میں 242 رنز کے عوض 15 وکٹیں 16 کی اوسط اور 7.11 کی اکانومی جو کہ کامیاب مستقبل کی نوید سنا رہی ہے۔ جہاں انگرام ، لیونگ اسٹون اور بابر اعظم نے بیٹنگ کمانڈ کو سنبھالا رکھا وہیں اس بار کراچی کی جیت کا محور عمر خان دِکھائی دیے۔
راولپنڈی سے تعلق رکھنے والے نوجوان بولر نے غریب گھرانہ میں آنکھ کھولی۔ 2014 میں پی سی بی کی جانب سے منعقدہ ” پیپسی کرکٹ اسٹارز انڈر 19 ” پروگرام میں فاٹا کے لیے سلیکٹ ہوئے مگر جوہر دِکھانے کا موقع فراہم نہ آیا۔ محنت کرکے ڈسٹرکٹ انڈر19 سے ہوتے ہوئے ریجن کی انڈر نائنٹین ٹیم میں جگہ بنا لی اور کارکردگی کے بل بوتے پر 2016 میں پاکستان انڈر 19 ٹیم کے لیے سری لنکا میں شیڈول ایشیا کپ میں نام آگیا۔ تین میچوں میں 3 وکٹیں ہاتھ آئیں۔

اپنا پہلا لسٹ اے میچ ڈیپارٹمنٹل کپ 2018 میں یونائیٹڈ بینک کی جانب سے واپڈا کے خلاف کھیلا مگر کوئی وکٹ نہ لے سکے۔ اُسی سال سوئی سدرن گیس کی جانب سے فرسٹ کلاس ڈیبیو پر دوسری اننگز میں 6 وکٹیں 37 رنز کے عوض حاصل کرکے ٹیم کی کامیابی میں کلیدی کردار ادا کیا۔ کہا جاتا ہے ندیم خان (سابق پاکستانی کرکٹر ، معین خان کے بھائی ) نے اس ہیرے کو پہچانا اور آگے لانے میں مدد کی۔
عمر خان کا نام اس سال کراچی کنگز کے ابتدائی 20 کھلاڑیوں میں نہ تھا مگر قسمت کب کس پر مہربان ہوجائے یہ اللہ پاک کو معلوم ہے اور بالآخر جب سیزن 4 شروع ہونے سے قبل جب ہر ٹیم کو اکیس واں پلیئر ٹیم میں شامل کرنے کی باری آئی تو عمر کی لاٹری نکل پڑی۔
عمر خان کا فیوچر تابناک ہے اس ٹورنامنٹ سے انکے کیرئیر کو مزید تقویت ملے گی۔ آسٹریلیا کے خلاف رواں ماہ ہونے والی ون ڈے سیریز کیلئے پاکستان ٹیم کا اعلان ہوچکا مگر عمر خان مکی آرتھر کی آنکھ کا تارا بن چکے ہیں۔ امید ہے جلد قومی ٹیم کے دروازے پر دستک دینگے۔

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں