14

عدلیہ کی ساکھ کوایک جج کے باعث متاثرنہیں ہونے دیں گے،بنیادی سوال مالی امورکاہے،اس کاجواب لیاجائےگا،،جسٹس عمرعطا بندیال

اسلام آباد سپریم کورٹ میں جسٹس قاضی فائزعیسیٰ کی درخواست پر جسٹس عمر عطابندیال نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہرجج قابل احتساب ہے،عدلیہ کی ساکھ کوایک جج کے باعث متاثرنہیں ہونے دیں گے،بنیادی سوال مالی امورکاہے،اس کاجواب لیاجائےگا،چاہے جسٹس قاضی فائزعیسٰی کے وکیل رضامندی نہ دیں،عدالت اس معاملے پرآگے بڑھے گی۔

نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق سپریم کورٹ میں جسٹس قاضی فائزعیسیٰ کی درخواست پر سماعت جاری ہے،جسٹس عمر عطابندیال کی سربراہی میں 10 رکنی بنچ سماعت کرراہ ہے،عدالت نے کہاکہ کوئی بھی شخص جوڈیشل کونسل میں رائے کے بغیرریفرنس بھیج سکتا ہے،صدرمملکت کوریفرنس بھیجنے سے پہلے اپنی رائےکا تعین کرنا ہوگا۔

جسٹس منیب اختر نے کہاکہ جج کے مس کنڈیکٹ کا آئین میں تعین نہیں،عدالت نے کہاکہ صدرکہہ دیں ان کی نظرمیں جج کامس کنڈیکٹ ہے تویہ دلیل خطرناک ہے۔

حکومتی وکیل بیرسٹر فروغ نسیم نے کہاکہ شوکازمیں جن الزامات کاذکرہے وہی ریفرنس میں درج ہیں،عدالت نے کہاکہ ریفرنس غیرملکی جائیدادوں کی ملکیت اورخریداری کے ذرائع کاہے۔

جسٹس عمر عطابندیال نے کہاکہ ہرجج قابل احتساب ہے،عدلیہ کی ساکھ کوایک جج کے باعث متاثرنہیں ہونے دیں گے،بنیادی سوال مالی امورکاہے،اس کاجواب لیاجائےگا،چاہے جسٹس قاضی فائزعیسٰی کے وکیل رضامندی نہ دیں،عدالت اس معاملے پرآگے بڑھے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں