26 جون عالمی یوم انسداد منشیات

26 جون عالمی طور پر انسداد منشیات منایا جاتا ہے لیکن حیرت کی بات ہے کہ نشہ آور اشیاء کی پیداوار ختم تو کیا کم بھی نہیں ہو سکی ۔ بہت سی چیزیں ایسی ہیں جنھیں حکومتی سرپرستی حاصل ہے ، جیسے کہ سگریٹ مضر صحت ہونے کے باوجود حکومتی اجازت سے فروحت ہوتی ہے ، شراب کی خرید و فروحت کے لیے لائسنس محکمہ ایکسائز سے جاری ہوتے ہیں – اس وقت پاکستان میں نشہ کرنے والوں کی تعداد تقریبا” ٤٠ لاکھ سے زیادہ ہے – پاکستان میں ہرسال پانچ کروڑ روپے سے زائد کی روپے کی منشیات استعمال کی جاتی ہے –

ایک محتاط اندازے کے مطابق دنیا بھرمیں 18 کروڑ افراد سب سے خطرناک نشے حشیش کا استعمال کررہے ہیں، جبکہ ایک کروڑ افرا د ہیروئن اور 60 لاکھ سے زیادہ افراد بقیہ دیگر چھوٹے نشے (پان ، گٹکا، سگریٹ، چھالیہ) کے عادی ہیں –

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں